Articles by "urdu chudai ki kahani in urdu"

adult stories in hindi Antarvasna Story baap beti ki chudai ki kahani bahan ki chudayi balatkar ki kahani behen ki chudayi bhabhi ki chudai bhai bahan ki chudai bhai bahan sex story in hindi bollywood actress ki chudai ki kahani bollywoos sex stories in hindi chacha bhatiji ki chudai ki kahani chachi ki chudai ki kahani chhoti bahan ki chudai chhoti ladkai ki chudai chudai ki kahaniya dehati chudai ki kahani devar bhabhi ki chudai ki kahani Didi ki Chudai Free Sex Kahani gand chudai gand chudai ki kahani gangbang ki kahani Ghode ke sath desi aurat ki sex story girlfriend ki chudai gujarati bhabhi habshi lund se chudai hindi sex stories Hindi Sex Stories Nonveg hindi urdu sex story jija saali sex jija sali ki chudai ki kahani Kahani kunwari choot chudai ki kahani Losing virginity sex story mama bhanji ki chudai ki kahani mama ki ladaki ki chudai marathi sex story mote lund se chudai ki kahani muslim ladaki ki chudai muslim ladki ki chuadi nana ne choda naukarani ki chudai New Hindi Sex Story | Free Sex Kahani Nonveg Kahani Nonveg Sex Story Padosi Ki Beti pahali chudai pakistani ladaki ki chudai Pakistani Sex Stories panjaban ladki ki chudai sali ki chudai samuhik chudai sasur bahu ki chudai sasur bahu ki sex story sasural sex story school girl ki chudai ki kahani seal tod chudai sex story in marathi suhagraat ki chudai urdu chudai ki kahani in urdu Virgin Chut wife ki chudai zabardasti chudai ki kahaniya एडल्ट स्टोरी कुंवारी चूत की chudai गर्लफ्रेंड की चुदाई गांड चुदाई की कहानियाँ जीजा साली सेक्स पहलवान से चुदाई बलात्कार की कहानी बाप बेटी की chudai की सेक्सी कहानी मामा भांजी चुदाई की कहानी ससुर बहु चुदाई सेक्स स्टोरी
Showing posts with label urdu chudai ki kahani in urdu. Show all posts

Bhabhi Ki Chhoti Bahan Mast Chudwane Lagi

Bhabhi Ki Chhoti Bahan Mast Chudwane Lagi



Garam Hindi Sex Story, Jija Sali Fucking, Mera naam Jatin hai aur main 20 saal ka hoon. Mera rang gora aur height 5’8 hai aur maine body bhi bahot achi bna rakhi hai jiss par bahot si ladkiyan fida hai. Mere lund ka size 7inch hai aur wo mota bhi hai jisse ladkiyan choosna chahti hai. Ab main apni kahani par aata hoon aur apko apni kahani me le chalta hoon. Bhabhi Ki Chhoti Bahan Mast Chudwane Lagi.

Ye kahani pichle saal pehle ki hai jab main B.Tech. 1st year me tha aur mere college ki bahot si ladkiyan mujh par marti thi. Us time mere bhaiya ki shadi bhi thi aur meri bhabhi mere city ki doosri colony me rehte the. To mujhe udhar side coaching ke liye aana padta tha aur unka flat bhi mere raste me aata tha.

Ek din kuch aisa hua ki main jab coaching puri kar ke wapis apne ko ghar ko jane ke chala toh thodi aage jate hi mujhe meri hone wali bhabhi mil gyi aur main bike rok li. Main bhabhi ko namaste ki aur kha – Aayo bhabhi main apko ghar tak chord deta hoon.


Bhabhi ne bhi han kha aur beth gyi kyoki wo time sardiyo ka tha aur thand bhi bahot padti thi. Main unhe ghar chod kar wapis hone lga tabhi bhabhi ne kha andar aaja par maine mna kar diya kyoki sham ke 5 baj gye the aur sardiyo me andhera jaldi hone ki vajah se rush bhi bahot hojata hai. Par bhabhi ne mujhe jaane nhi diya aur andar le hi gyi main bhi unki baat kaat na ska aur andar chala gya.

Main andar aa gya aur sofe par beth gya aur pta chala ki ghar par bhabhi aur unki choti behen Jhanvi hai, aur baki sare ghar wale pados me kisi function par gye hue hai. Tab bhabhi ne mujhse roti khane ko kha par maine mna kar diya aur itne me unki choti behen humare pass aa gyi.

Wah kya kayamat lag rhi thi Jhanvi uski kaatilana najar, uske gulab se bhare gulabi honth aur figure to maano bande ko khada khada hi geela kar de. Wo dikhne me bahot sundar thi aur sexy bhi maine jab usse dekha to dekhta hi reh gya aur lund bhi khada ho gya. Fir hum sab uske room me beth kar baate marne lag gye aur baton baton me pta chala ki usne abi 11th ke exam diye hai aur 12th me admission li hai.

Itne me ghar ki bell baji aur bhabhi ne darwaja khola to dekha ki pados ki aunty unhe bulane aayi hai aur wo unke sath bahar chali gyi. Hum ek dusre sath itna ghul mil gye the ki mano aise lag rha ho ki pichle janam ki bhichde panchi mil gye ho.


Tab mujhe bahot jor ki susu lagi thi aur maine usse washroom ke baare pucha aur washroom chala gya. Jab main washroom se wapis aa rhi thi tab maine dekha ki Jhanvi mere phone me blue film lga kar dekh rhi hai aur apne hatho se apne boobs daba rhi hai.

Main kamre ke bahar se usse dekh rha tha aur khade khade uski chudai ke sapne dekh rha tha aur mera lund bhi bhi dande ki tarah khada ho gya tha. Mujhse ab aur intezar nhi ho rha tha main dheere se andar gya aur usse piche se pakad kar uski frock ke upar se hi uske boobs ko hatho me le liya.

Pehle to wo ghabra gyi par mujhe dekh kar bina kuch kahe mera sath dene lag gyi. Kya kamaal ke the uske boobs main usse dheere dheere masalne lag gya aur khada khada hi uski panty me hath daal kar chut ki jannat ko apni ungalio se mehsus karne lag gya.

Ab maine usse bed par gira diya aur uske upar aa kar uske gulabi hontho ko chusne lag gya. Wo bhi mere hontho ko chus chus kar mere hontho ka sawad le rhi thi. Ab maine apni jeeb uske muh me daal di aur usne meri jeeb ko lolipop ki tarah chusa. Mujhe bahot maja aa rha tha fir maine uske kapde utar diye aur usne mere bhi utar diye. Kyoki humme garmi lagne lag gyi thi.


Ab maine uske nange badan ko niharta aur niharta hi reh gya, kyoki uska nanga badan dekh kar mere muh me paani aa gya tha. Aur maine usse chatna shuru kar diya aur chatte -2 uski garden par dant bhi maar diya. Aur fir uske santre jaise boobs ko pakad kar muh me le liya aur muh me bhar kar chusne lag gya. Iska Jhanvi bhi bahot maja le rhi thi aur maje me lambi lambi siskariya bhar rhi thi.

Ab mujhse aur bardash nhi hua aur maine uski panty utar kar usse nanga kar diya aur apna muh uski choot par le gya. Jaise hi mera muh uski choot par aaya uski choot ki khushbu se mano chehak utha aur chooth ko khol kar chatne lag gya. Uski chikni gulabi choot itni mast thi ki main uski choot ko icecream samjh kar chaati ja rha tha.

Idhar Jhanvi bhi bahot maja le rhi thi aur lambi lambi siskariya bhar rhi thi. Aur ek dam se apni tango ko tight kar mera muh fasa kar apna saara paani mere muh me hi nikal diya jisse main saara chatt se pi gya.

Ab maine uski choot ka paani pi liya tha aur uska paani bahot lajvab tha. Main uski choot ko lagatar chaati ja rha tha aur uske boobs ko hatho me le kar dabayi ja rha tha jisse Jhanvi fir se mera sath dene lag gyi thi.


Ab maine bhi deri kiye apna lund uski choot par ragadana shuru kar diya tha aur jor jor se uski choot par ragadta ja rha tha. Aur idhar uske nipple ko muh me le kar chus rha tha tabhi fir se Jhanvi ki choot ne apna paani mere lund par nikal diya.

Ab maine bhi bina deri kiye uski choot par apna chikna lund set kiya aur ek dhakka mara jisse lund choot me aadha chala gya. Par aadhe jaane se lund ki payas nhi bhuj rhi thi isliye maine ek jor dar jhatka mara jisse lund uski choot me pura chala gya.

Aur idhar Jhanvi ne bahot jor se cheenkh maari maine uske muh par apna hath rakh diya. Ab fir se lund ko bahar nikal kar uski choot me ek rocket ki tarah apna lund chalaya jo ki uski bachedani pe ja kar lga jisse usne fir se cheenkh maari. Aur maine fir se uske muh par apna hath rakh diya aur wo rone lag gyi. “Bhabhi Ki Chhoti Bahan”

Thodi der tak main dheere dheere uski choot marta rha jisse uska dard kam ho gya. Aur maine fir se apne lund ki speed bada kar uski chudai karne lag gya, ab Jhanvi bhi aaaahhhh aaahhhhh aaaahhh jaise awaje nikal rhi thi aur madhoshi me hi chod do chod do boli ja rhi thi.


Maine apna rocket chalu rakha jisse Jhanvi ne apna paani ek baar fir nikal diya. Aur ab maine bhi moke ki najakat ko samjhte hue 10minute baad apna kholta hua laava uski choot me uchaal diya. Ab hum dono thodi der aise hi lete rhe aur fir thodi der baad apne kapde daal kar beth gye aur ek dusre se baaten marne lag gye.

Thodi der baad ghar ki bell baji aur humme lga ki bhabhi aa gyi hai. Jhanvi ke uthne se pehle maine usse long kiss kari aur uske boobs ko jor jor se dabaya aur fir wo darwaja kholne chali gyi aur kha – Didi aayi hai.

Main – Bhabhi aap itni der se kha thi? Bhabhi – Pados me jha function tha main vaha chali gyi thi. Raat ke 9 baj rhe the aur bhabhi ne mujhe vahi rukne ko kha par maine bhabhi se kha – Bhabhi agar nhi gya to ghar wale pareshan ho jayenge aur dant bhi bahot padegi.

Bhabhi – Itni si baat hai toh main phone kar ke keh deti hoon ki Jatin aaj mere yha so jayega. Tab to koi pareshani nhi hogi!! Mere man me laddu foot rhe the aur maine kha – Jaise apko thik lage. Main apne bhaiya ke hone wale sasural me ruka.

يوم نكت فيه اجمل بنت

يوم نكت فيه اجمل بنت



كتير بافتكر اليوم ده….
كتير بابقي عاوز ارجع اكمله…. بابقي عاوز ارجع عالكنبة دي…. جنبك..عاوز اكمل دور الكوتشينة ده و انتي باصه في عينيا بعينيكي العسلي دول…باستهبل و باقولك ما تيجي نلعب علي فلوس بقي ولا عالهدوم لقيتك فاكراني باهزر و قلتي تتحديني….

ولد زبيد و بنت هارت… قلت اجرب اول ما خسرت رحت قلعت التي شيرت… لسه فاكر وشك و هو احمر مالكسوف….. لسه فاكر اما خسرتي انتي و كنتي عاوزة تهربي… ههههههه الاتفاق اتفاق… قولتيلي مش لابسة غير الجلابية الضيقة دي…. اقلعها ازاي…. قولتلك قومي البسي حاجة بدالها… رحتي لبستي روب احمر …. كنت هاتجنن و انا عارف تحت الروب ده جسمك…. خسرتي تاني…. قلعتي البنتي تحت الروب من غير ماشوف حاجة من تحت… قولنيلي حيلك بتبص علي ايه ياض… لسه لابسة جي سترينج مش هيصة هي ههههههه…. سرحت في عينيكي… الدم فار في دماغي……
لسه فاكر طعم شفايفك …. بابقي عاوز ابوسك تاني…. اخد شفايفك في بقي و اكلها اكل…. المس لسانك بلساني…. و ايديا بتحضن كل مللي في جسمك…. شعرك الناعم الطويل و ايديا ماشية فيه…. و نازلة علي ضهرك بتضمك ليا قوووي…. بتعصرك…..

عينينا مقفولة بس حاسين بكل حاجة كاننا مفصولين من جسمنا السخن…. و ايديا بتنزل لتحت علي ضهرك و حاسس بايدك بتمسك علي ضهري اكتر…. كانها بتطبطب عليا…. بتشجعني…. بتقولي انا كمان عاوزاك يا حبيبي…. باقولك بحبك في شفايفك و بانزل ابوس رقبتك بوسات صغيرة نازلة لتحت…. علي صدرك…..

بتنامي عالكنبة و باركب فوقيكي برجليا من الناحيتين…. و بانام علي صدرك و بافتح الروب…. بالراحة بتفتح…. اول مرة اشوف صدرك…. مش عارف اعمل ايه…. بس غريزتي بتقولي ابوسه…. انام عليه…. ارضعه…. باخد واحد في بقي و امصه و لساني بيلف حواليه جوة بقي…. و ايدي التانية ماسكة التاني و بتشده كأنها بتحلبها بالراحة…. بالف حواليها بصوابعي خايف اوجعها…. بارضع واحد…. باحلب التاني…. ايديكي علي راسي…. بتقولي بحبك…. بتمسح علي شعري….

ايديا بتسيب صدرك و بتنزل تفتح باقي الروب من تحت…. بالاقي استك الجي في ايديا…. بارفعه عن جسمك المولع…. السخونية بتزيد كل ما باقرب…. بافتح البنطلون و اقلعه…. و بارجع في نفس الوضع…. باطلع تاني امص الحلمة و انقل عالتانية…. واقف مووووت…. غرقان عالاخر…. باجيب زيت مغرق رجليكي من جوة…. بتقفلي عليه…… باطلع بيه و بانزل كاني…………….

باقلعك الجي و انتي مكسوفة مووووت…. بابوس رجليكي و باطلع ابوس لفوق…. لغاية جوة رجليكي…. بالحسهم…. لساني و ايديا بتفتحك بالراحة…. السخونية بتشدني عليه…. علي ك**….. بابوسه…. بالحسه…. بالحسه من فوووق قووي لتحت خالص…. لغاية ط***… بتتكسفي اكتر…. باطلع الحس تاني و تالت و عاشر…. بقيت انا غرقان اكتر…. عاوز يدخل بيته…. عاوز يفتحك….. ين***………باطلع بيه و بادعكه في ك**.. بادعك راسه فيه ده اللي وقف عالاخر برضه…. بادخل راسه في ك**.. بالراحة…. و باسيبها…. باسيبها شوية عشان ياخد عليها…. و يريح…..

بترفعي رجليكي عشان تتن***…. باركب عليكي بجسمي كله زي الكلب…. و بان*** بالراحة خالص…. في كل رزعة بابص في عينيكي و هي بتحس بالرزعة في سقف ك**…. عاوزك…. عاوز ان*** جامد قوي… عاوز اريح ك** و انزل الحسه و بعدين ان*** تاني…. و افضل كدة…. افضل افشخ في ك** و اطلع الحسه من فوق لتحت واعضه و امصه و ارجع اركبك تاني…. اني*** و انتي فاشخة رجليكي و انتي واقفة مزنوقة في الحيطة…. و ز*** طالع داخل في ك** بيحك و بيدعك في زمبورك….


میرے دوست کی بہنوں نے مجھے چودا




میرے ایک دوست کی چار بہنیں ہے، چاروں کی شادی ہو چکی ہے پر تین سال پہلے وہ چاروں شادی شدہ نہیں تھی. ایک کا نام سونو، دوسری کا نام مونو، تیسری کا نام ببلی اور چوتھی کا نام ريتو ہے. ريتو میری محبوباؤں تھی اور آج بھی ہے. ہم 7-8 لوگ روز چھپن چھپاي کھیلتے تھے.
ایک دن ہم بس پانچ لوگ ہی تھے، میں اور وہ چار لڑکیاں!

سونو بازی دے رہی تھی اور ہم چار لوگ چھپے هے تھے، میں اور میری محبوباؤں ایک ساتھ ہی تھے، وہ بہت ہی سیکسی تھی وہ مجھ آہستہ آہستہ چپکنے لگی، مجھے ہوٹوں پر چومنے لگی. مجھے پہلی بار کسی کے ہوٹوں پر چوما تھا. ہم دونوں بیڈ کے نیچے چھپے تھے، وہ دھیرے دھیرے میرے اوپر چڑھنے لگی، مجھے ڈر لگنے لگا وو دھیرے دھیرے میرے لںڈ کی طرف اپنا ہاتھ بڑھانے لگی، میری پیںٹ کی جپ کھول دی اور میرا لںڈ پکڑ لیا. میں اور ڈر گیا!

میں نے اس سے پوچھا یہ کیا کر رہی ہے تو؟
تو وو بولی- آپ خاموشی لیٹے رہو!

اور اس نے میرے ہوٹوں پر آپ نے ہونٹ رکھ دیے اور میرا منہ بند کر لیا. وہ دھیرے دھیرے میرے لںڈ کو ہلانے لگی اور میرا لنڈ کھڑا ہو گیا. اب مجھے بھی بہت اچھا لگنے لگا تھا. اس نے میرا لنڈ اپنے منہ میں لے لیا اور چوسنے لگی. مجھے بہت گدگدی ہو رہی تھی پر مجا بھی بہت آ رہا تھا. وہ میرا لنڈ چوستی رہی.

تبھی اس کی تین بہنیں اور آ گئی اور میں اور وہ دونوں ہی بہت ڈر گئے تھے. اس کی تینوں بہنیں غصے سے مجھے اور اسے دیکھنے لگی. اب ہم پانچوں ایک دوسرے کی طرف دیکھنے لگے. وہ تینوں بہنیں دھیرے سے مسکرائی طرف بولی- بیڈ کے نیچے کیا کر رہے ہو تم دونوں؟ چلو باہر چلو! ريتو تو کیا اکیلے ہی سارا مزا لے لے گی! ہمیں نہیں لینے دے گی کیا!

اور ارد بہنوں نے مجھے بیڈ پر لٹا دیا. پھر سونو بولی- تم تینوں مزے لو، میں باہر دیکھتی ہوں کہ کوئی آنا جائے! ٹھیک ہے؟

سونو باہر چلی گئی، ريتو تو میرے لںڈ ہی چپکی رہی، مونو مجھے ہوٹوں پر کس کرنے لگی اور ببلی میرے ہاتھ کی بڑی انگلی کو اپنی چوت میں ڈالنے لگی پر میں تو کچھ کر ہی نہیں پا رہا تھا. اب ريتو جھڑنے والی تھی اس لیے اس نے اپنے کپڑے اتارے، اپنی چوت میرے لںڈ پر رکھ دی اور میرے لںڈ پر اوپر-نیچے ہونے لگی. اس کی چوت بہت ہی ٹائیٹ تھی میرے لںڈ میں درد ہونے لگا تھا پر چدائی میں بہت مزا آ رہا تھا اس لیے میں سارا درد برداشت کر رہا تھا.

مونو جو کہ میرے ہوٹوں کو چاٹ رہی تھی، اب اس نے بھی اپنے کپڑے اتار دئے تھے پر اپنی چوت کے منہ کو میرے ہوٹوں پر رگڑنے لگی. میں نے بھی اس کی چوت کو جیبھ سے چاٹنا شروع کر دیا. تب تک ببلی بھی اپنے کپڑے اتار چکی تھی. ببلی تو بس میری انگلی سے ہی اپنی چوت چدوا رہی تھی. تینوں نے مجھے اپنے نیچے دبا رکھا تھا.

میں بہت پریشان ہو چکا تھا. میں نے تینوں کو اپنے اوپر سے ہٹا دیا اور غصے میں کہا سالی رڈيو! ایک ایک کر کے آو! كتتيو آو!

تب میں نے پہلے اپنی محبوباؤں ريتو کو پکڑا اور بیڈ پر دونوں ہاتھ ركھوايے اور گھوڑی بنا کر اسے چودنا شروع کیا. 15 منٹ تک چودا، پھر میں جھڑ گیا. سارا کا سارا ویرے اس کی چوت میں ہی چھوڑ دیا. وہ بھی جھڑ چکی تھی، میں نے اسے کمرے سے باہر جانے کو کہا تو وو بولی- کیوں جاؤں؟
میں نے بولا تیری دو بہنوں کو بھی تو چدنا ہے!
تو ريتو بولی- تو میرے سامنے ہی چودو نہ!

میں نے بولا نہیں، تو چدائی دیکھے گی تو پھر سے چدانے کے لئے تیار ہو جائے گی اور مجھ میں اتنی طاقت نہیں ہے کہ بار بار چود پاو!

اور میں نے ريتو کو باہر کا راستہ دکھایا. اب مونو کی باری تھی، وہ بہت دیر سے بے چین تھی. میرا لںڈ ڈھیلا پڑ گیا تھا، میں نے مونو سے کہا- مونو، میری جان! میرے لںڈ کو كھڑ تو کر! جان، تبھی تو تجھے چود پاوگا!

اتنا بولنے کی ہی دیر تھی کہ اس نے میرا لنڈ پکڑ لیا. آہستہ آہستہ میرا لںڈ کھڑا ہو رہا تھا اور ببلی کھڑی کھڑی سب دیکھ رہی تھی اور اپنی باری کا انتظار کر رہی تھی، اپنی چوت میں اںگلی بھی کر رہی تھی. میں نے مونو کی ایک ٹانگ اپنے کندھے پر رکھی اور دوسری ٹانگ زمین پر ہی تھی، میں نے اسے ایک ہاتھ سے کمر پر پکڑ رکھا تھا، ایک ہاتھ سے اس کے چچے دبا رہا تھا اور زور زور کے دھکے مرتا جا رہا تھا. وہ بہت چللا رہی تھی، میں نے اس کے چچے دبانا بند کر اس کے ہاتھ سے اس کا منہ بند کر دیا اور پھر 15-20 منٹ میں میں نے ایک بار پھر جھڑ گیا اور سارا ویرے اس ہی چوت میں جھاڑ دیا. مجھے لگا کہ شاید وہ اب جھڑی نہیں ہے. پھر میں جلدی سے اس کی چوت میں اںگلی کرنے لگا. 5 منٹ کے بعد وہ بھی جھڑ گئی اور باہر چلی گئی.

اب ببلی کی باری تھی. ببلی کی چوت اؤر گاںڈ دونوں ہی بہت اچھی تھی. دونوں ہی چیز بغیر بال کے تھی. پہلے تو میں نے اس کی چوت میں انگلی کی، آہستہ آہستہ ایک اںگلی اسکی گاںڈ میں بھی ڈال دی. وہ سسکیاں لینے لگی پر میرے لںڈ پر کوئی فرق نہیں پڑ رہا تھا. وہ کام واسنا کے آخری مرحلے پر تھی اس لئے اس نے مجھ کہا راہل پلیز! مجھ سے جانب دیر تک رکا نہیں جائے گی، مجھے جلدی سے چودو!
مینے کہا-، ابھی تو میرا لںڈ کھڑا ہی نہیں ہے تو کیسے چودو تجھے!
آہستہ آہستہ میرا لںڈ پھر سے کھڑا ہو گیا. مینے اسے بیڈ پر لٹايا، دونوں ٹاںگیں اپنے کندھے پر رکھی اور لںڈ اسکی چوت کے منہ پر رکھ کر ایک جور کا دھکا مارا. وہ بہت زور سے چللاي. آواز سن کر باہر سے آواز اي- کیا ہوا ببلی؟ تیری چوت پھٹ گئی کیا؟
میں زور زور کے دھکے لگاتا رہا، وہ چلاتی رہی پر میں تو اپنے جوش میں تھا، میں کہاں رکنے بالا تھا، دھکے مارتا رہا، مارتا رہا. مجھے اسکی گاںڈ بہت خوبصورت لگ رہی تھی تو میں نے چوت کو چھوڑ،

وو پھر چللاي اور، مجھے بھی درد ہو رہا تھا. میں دھیرے دھیرے اس کی میں اپنا لںڈ اندر باہر کر رہا تھا. وہ آہستہ آہستہ نرم ہوتی جا رہی تھی اور میری رفتار آہستہ آہستہ تیز ہوتی جا رہی تھی.

اب وو مکمل طور پر نرم ہو چکی تھی، میں زور زور سے دھکے لگا رہا تھا، وہ دھیرے دھیرے چللا رہی تھی. میں نے اس کی چوت بہت دیر تک ماری اور مختلف طریقوں سے اسے چودا. وہ تو دو بار پہلے ہی جھڑ چکی تھی، اب وہ تیسری بار جھڑ گئی اور اس کے ساتھ ہی میں بھی جھڑنے والا تھا.

میںنے اپنا لںڈ جلدی سے باہر نکلا اور اس کے منہ میں ڈال دیا. وہ اسے چوسنے لگی اور میں اس کے منہ میں ہی جھڑ گیا. وہ میرا سارا کا سارا ویرے پی گئی. اب تینوں بہنیں خوش تھی، تینوں کمرے میں آئی اور مجھے چومنے لگی.
پنے دوست کی تین بہنوں کو تو میں چود چکا تھا پر ایک بچ گئی تھی جس کا نام سونو تھا. سونو سب سے بڑی تھی، اس کی عمر تقریبا 25-26 سال کی تھی اور اس کی چند ماہ بعد شادی بھی ہونے والی تھی اور وہ ہر وقت اپنی شادی کی سہاگرات کے بارے میں سوچتی رہتی تھی.
جب میں تینوں لڑکیوں کو چود رہا تھا تب وہ سونو ہمیں کھڑکی سے دیکھ رہی تھی. جب میں تینو کو مکمل طور پر چود چکا تھا تب مجھے بہت امن ملی. پر مجھے کیا پتہ تھا کہ ایک اور ہیں چودنے کے لئے، وہ سب سے بڑی تھی اس لئے میں نے اس کے ساتھ جنسی تعلقات کے بارے میں نہیں سوچا تھا. پر سونو کے ذہن میں تو بس سیکس ہی گھوم رہا تھا. وہ کمرے میں آئی جس میں ہم چاروں بیٹھے تھے، میرا ہاتھ پکڑ لیا، میں ڈر گیا. اس نے میرا ہاتھ پکڑا اور ایک دوسرے کمرے میں لے گئی، کمرے کی کنڈی لگا دی. اس کی آنکھوں میں جیسے خون اتر آیا تھا، اسے دیکھ کر میری گاںڈ اور پھٹ گئی. پھر سونو نے مجھے بیڈ پر دھکا دے کر لٹا دیا اس کی تینوں بہنیں کھڑکی سے سب کچھ دیکھ رہی تھی. سونو نے سی ڈی پلیئر پر ‘عاشق بنایا آپ نے’ کا گانا لگا دیا اور وہ میری طرف دیکھنے لگی. میں نے اپنی آنکھیں نیچے کر لی کیونکہ وہ مجھ عمر میں بہت بڑی تھی. اب وو دھیرے دھیرے میری طرف بڑھنے لگی.
میں اپنے دل میں یہی سوچ رہا تھا کہ یار جو کام مجھے کرنا چاہیے تھا، وہ تو یہ کر کہی ہے، اور ڈرنا اسے چاہئے تھا، تو ڈر میں رہا ہوں. پھر میں نے بھی یہ فیصلہ کر لیا کہ سونو جو کرنا چاہتی ہے، کرنے دیتا ہوں. میں بھی تو دیکھوں کہ ایک لڑکی میں کتنا جنسی ہوتا ہے. بس پھر کیا تھا، میں چپ چاپ لیٹا رہا، سونو دھیرے دھیرے میرے پیروں کو چومتی چومتی اوپر کی طرف آنے لگی. پر مجھے کچھ نہیں ہو رہا تھا کیونکہ میں پہلے ہی تین لڑکیوں کو اچھی طرح چود چکا تھا.
وہ دھیرے دھیرے میرے سینے پر آ گئی اور میرے سینے کو چومنے لگی، پھر گلے کو چومنے لگی. کچھ دیر میں سونو میرے ہوںٹوں کو عام کی طرح چوسنے لگی. دو تین بار تو سونو نے میرے ہوںٹوں کو کاٹا بھی، پر پھر بھی میں لیٹا ہی رہا. بہت دیر تک سونو میرے ہوںٹوں کو چوستی رہی اور ایک ہی گانا بار بار چلتا رہا. سونو اپنا ایک ہاتھ آہستہ آہستہ نیچے کی طرف لے گئی اور میری پیںٹ کے اوپر سے ہی میرا لںڈ پکڑ لیا. لںڈ تو گہری نیند میں سو رہا تھا پر پھر بھی سونو میرے لںڈ کو نیند سے جگانے میں لگی ہوئی تھی. سونو نے میری پیںٹ کی جپ کھولی اور میرا لںڈ ہاتھ میں لے لیا.
اس کے گرم ہاتھوں نے جیسے ہی میرا لںڈ پکڑا، میرے جسم میں بجلی سی دوڑ گئی اور میں نے سونو کو زور سے اپنی باہوں میں بھر لیا، اتنی زور پکڑا کہ سونو چللا پڑی. کھڑکی سے سونو کی تینوں بہنیں سب دیکھ رہی تھی. میں نے سونو سے بولا سونو جی، پہلے آپ یہ کھڑکی بند کر دو. نہیں تو تم چاروں بہنیں مجھے میرے گھر نہیں جانے دوگی اور میرے اندر اتنی طاقت نہیں ہے کہ ایک کے بعد ایک کی چدائی کر سکوں!
سونو نے کھڑکی بند کر دی اور پھر سے وو میرے اوپر آ گئی. اب سونو آہستہ آہستہ اوپر سے نیچے کی طرف چومتے ہوئے آنے لگی اور میرے ٹھنڈے لںڈ کو اپنے منہ کی گرمی دینے لگی. لوہا گرم تھا، صرف چوٹ مارنا باقی تھا. میں نے سونو کو کتیا کی طرح جھکنے کو کہا پر اس کے دل میں تو کچھ اور ہی چل رہا تھ
سونو بولی- اب روکو میری جان! جلدی کیا ہے، ابھی تو کھیل بہت دیر تک چلے گا! ابھی سے چوككے-چھکے لگاوگے تو جلدی آؤٹ ہو جاؤ گے!
بس اتنا بولا اور سونو نے اپنی چوت میرے مںہ پر سٹا دی اور بولی میں ہی سب کروں گی یا تو بھی کچھ کرے گا؟ چاٹ میری چوت کو!
اور ہم 69 کی پوزیشن میں آ گئے. سونو میرا لںڈ چوس رہی تھی اور میں اس کی چوت! بہت دیر تک یہی چسمچاسي ہوتی رہی.
میں اسکی چوت چوستے-چوستے تھک گیا تھا تو میں نے اپنی دو انگلیاں اس کی چوت میں ڈال دی. وہ شاید پہلے بھی کسی سے چد چکی تھی، دو انگلیوں سے سالی کو کچھ بھی نہیں ہوا پر پھر بھی میں دو انگلیاں اندر باہر کرتا رہا. آہستہ آہستہ دو سے تین انگلیاں اندر کر دی. جیسے ہی میں نے تین انگلیاں اندر کی، سونو تو اچھل گئی اور بولی ہائے، یہ کیا کیا تو نے! کتنا مزا آ رہا تھا چوسنے اور چسوانے میں! اب تو نے میری چوت میں کھجلی کر دی! اب تو بس تو میری چوت پھاڑ ہی ڈال! اب نہیں رکا جائے گا! اب تو مجھے کتیا بنا یا گھوڑی، صرف چود دے مجھے تو!

پھر کیا تھا، سونو کو میں نے بستر پر پیٹھ کے بل لٹا دیا، اس کی دونوں ٹانگیں اپنے کندھے پر رکھی اور اپنے ایک ہاتھ سے اپنا لںڈ پکڑ کر سونو کی چوت کے منہ پر رگڑنے لگا. لںڈ کی رگڑ سے سونو اور پاگل ہو گئی اور مجھے گالی دے کر بولی- کتے! اب آپ نے لنڈ کو چوت میں تو ڈال!
پر میں کہاں سننے والا تھا، میں تو بس اس کی چوت پر اپنا لںڈ رگڑتا رہا، بہت دیر تک سونو مجھے گندی گندی گليا دیتی رہی اور میں رگڑتا رہا. اب سونو کی چوت سے چیکنا سا پانی نکلنے لگا، سونو بولی- کتے، ڈال دے چوت میں! میں جھڑنے والی ہوں!
میں نے سونو کے چکنے پانی کو اپنے لںڈ پر لگایا اور زور کا دھکا مارا، سونو ایک دم سے چیخ پڑي- اااااااااا کتے مار ڈالا!

میں نے سونو کی چوت میں جیسے ہی اپنا لںڈ ڈالا وو جھڑ گئی، میرا پورا لںڈ اسکی چوت کے پانی سے نہا گیا اور وہ پرسکون پڑ گئی. پر میں نہیں جھڑا تھا، میں سونو کی چوت چودتا رہا پر سونو کی چوت مارنے میں مزہ نہیں آ رہا تھا کیونکہ وہ پہلے بھی کسی سے چد چکی تھی. پھر میں نے سونو سے بولا سونو، تیری چوت مارنے میں مزہ نہیں آ رہا! میں تو تیری گاںڈ مارگا!
پر سونو نے انکار کر دیا پر میں بھی بہت ضد تھا، میں نے سونو کی چوت ایک کپڑے سے صاف کی اور چوت کے دانے کو اپنی جیبھ سے سہلانے لگا. آہستہ آہستہ سونو کو پھر سے جوش چڑھنے لگا. سونو کچھ ہی دیر میں پھر سے پاگلوں کی طرح میرے سر کو پکڑ کے اپنی چوت پر دبانے لگی. میں سمجھ گیا کہ سونو اب مکمل طور پر جوش میں ہے.
سونو مجھ بولی- پھاڑ دے میری چوت کو!
پر مجھے تو گاںڈ مارنی تھی، صرف میں کھڑا ہو گیا اور اپنے گھر جانے لگا. سونو جنسی تعلقات میں پوری طرح تڑپ رہی تھی. سونو بولی- کہاں جا رہے ہو تم؟
میں نے بولا اپنے گھر جا رہا ہوں!

پھر سونو بولی- مجھے تڑپتا ہوا چھوڑ کر کیوں جا رہے ہو؟
میں نے بولا تیری چوت مارنے میں مجھے بالکل بھی مزا نہیں آ رہا ہے، تیری چوت مارنے سے تو اچھا ہے کہ میں مٹھ ہی مار لوں!
سونو تڑپتی ہوئی بولی پلیز! راہل، مجھے ایسے چھوڑ کر مت جاؤ!
میںنے بولا- میں ایک ہی شرط پر تجھے چودوگا!
وو بولی- کیا؟ میں نے اس کی چوت کے دانے کو چوسنا شروع کر دیا. چند منٹ میں سونو بھی جھڑ گئی اور ہم دونوں ایک دوسرے سے چپک کر کچھ دیر تک لیٹے رہے اور کس کرتے رہے.
پھر میں اپنے گھر جا کر سو گیا.
اس دن کے بعد میں ان کے پاس بہت کم جانے لگا پر جب بھی جاتا تو بس اپنی محبوباؤں ريتو کو ہی چودتا تھا اور کسی کو نہیں!


Author Name

Adult Stories

Contact Form

Name

Email *

Message *

Powered by Blogger.